جناح‌ اسپتال کراچی میں‌ دنیا کا مہنگا ترین علاج بالکل مفت، ہزاروں‌ مریض‌ مستفید

اسپتال انتظامیہ نے دوسری مشین بھی درآمد کرنے کی تیاری شروع کردی

کراچی: شہر قائد میں واقع جناح اسپتال میں نصب ہونے والی روبوٹک مشین سے ہزاروں مریضوں نے بالکل مفت استفادہ کیا۔

تفصیلات کے مطابق کراچی میں واقع جناح اسپتال میں دنیا کی مہنگی ترین مشین سنہ 2012 میں نصب کی گئی جس کی مالیت پانچ ارب 70 کروڑ روپے کے قریب بنتی ہے۔

جناح اسپتال میں نصب ہونے والی روبوٹک مشین سے کینسر اور دماغی رسولی کا تابکاری شعاعوں کے ذریعے بالکل مفت علاج کیا جاتا ہے۔

ڈاکٹر سیمی جمالی نے نمائندہ اے آر وائی کو تصدیق کی کہ اب تک اس جدید مشین کے ذریعے 5 ہزار سے زائد مریضوں کا آپریشن کیا گیا جن میں سے 131 مریض دیگر ممالک اور شہروں سے بھی آئے تھے۔

یاد رہے کہ تابکاری شعاعوں کے ذریعے علاج کرنے کی فیس 9 لاکھ امریکی ڈالرز سے بھی زیادہ ہے جسے غریب آدمی برداشت نہیں کرسکتا۔

اسپتال انتظامیہ دوسری مشین بھی منگوانے کی خواہش مند ہے اگر ایسا ہوگیا تو یومیہ 24 مریضوں کا علاج ممکن ہوگا۔ جن مریضوں کا تابکاری شعاعوں کے ذریعے علاج کیا گیا اُن میں سے بیشتر کینسر کے مرض میں مبتلا تھے۔

واضح رہے کہ یہ مشین اسٹینڈ فورڈ یونیورسٹی کے ماہرین نے ایجاد کی تھی جس کو کامیاب تجربے کے بعد فروخت کے لیے پیش کیا گیا۔

جناح اسپتال کو دنیا بھر میں یہ اعزاز حاصل ہے کہ وہ علاج کے عوض مریضوں سے کوئی فیس نہیں لیتا بلکہ انہیں مفت ادویات بھی فراہم کرتا ہے۔

یہ بھی یاد رہے کہ سندھ حکومت دوسری روبوٹ مشین کی درآمد کے لیے 1 ارب 10 کروڑ روپے کی منظوری دے چکی ہے۔

Comments

comments