وہ کون سا کھیل ہے جس سے مرنے کے امکانات کئی فیصد کم ہوجاتے ہیں؟

نیویارک: امریکا کے طبی ماہرین نے ایک ایسا کھیل بتا دیا جسے کھیلنے والوں کی عمر طویل ہوتی اور اُن کے مرنے کے امکانات بھی کم ہوجاتے ہیں۔

ویسے تو لمبی زندگی کے حوالے سے اب تک کئی تحقیقات ہوچکی ہیں، جن میں ماہرین بتا چکے ہیں کہ صحت بخش غذائیں، باقاعدگی کے ساتھ وزرش اور مکمل نیند طویل زندگی اور صحت کی ضامن ہیں۔

یونیورسٹی آف میسوری کے پروفیسر اور تحقیقی ٹیم کے سربراہ ڈاکٹر عدنان قریشی کے مطابق وہ لوگ جن کی عمریں 60 سے زائد ہیں انہیں باقاعدگی کے ساتھ گالف کھیلنا چاہیے تاکہ وہ صحت مند رہیں۔

ڈاکٹر عدنان کے مطابق جو لوگ گالف نہیں کھیلتے اُن کے بیمار ہونے اور مرنے کے امکانات بڑھ جاتے ہیں کیونکہ وہ چہل قدمی نہیں کرپاتے جو سب سے بڑی وجہ ہے جبکہ گالف کھیلنے والے ورزش بھی کرتے اور وہ کھیل کی وجہ سے واک بھی کرتے ہیں۔

ماہرین نے تحقیق کے دوران گالف کھیلنے والے 5900 جبکہ نہ کھیلنے والے 384 افراد کا ڈیٹا جمع کیا۔ جس کے دوران یہ بات سامنے آئی کہ جو لوگ چھ ماہ میں ایک بار گالف کھیلنے جاتے ہیں وہ دماغی طور پر مکمل صحت مند ہیں جبکہ انہیں دل کی بھی کوئی بیماری لاحق نہیں ہوئی۔

تحقیقی نتائج کے مطابق جو لوگ گالف نہیں کھیلتے تھے انہیں ہارٹ اٹیک ہوا اور ڈنمیشیا کی بیماری لاحق ہوئی۔ ماہرین نے مشورہ دیا کہ مہینے میں کم از کم ایک بار گالف ضرور کھیلیں۔

گالف صحت کے لیے فائدے مند کیسے ہے؟

تحقیقی نتائج کے مطابق گالف کھیلنے والوں کے مرنے کے امکانات 8 فیصد کم ہوتے ہیں، جبکہ 65 سال سے زائد کی عمر کے بزرگ چست رہتے ہیں کیونکہ کھیلنے کے دوران ہلکی جسمانی مشقت بھی ہوجاتی ہے جس سے جسم متحرک رہتا ہے۔

گالف کھیلنے کے دوران چلنے سے عمر رسیدہ افراد کی صحت بہتر رہتی ہے، جس سے وہ دل کے امراض سے بھی محفوظ رہتے ہیں۔

تحقیق کے نتائج فروری میں لاس اینجلس میں ہونے والی امریکن اسٹروک ایسوسی ایشن انٹرنیشنل کانفرنس میں پیش کیے جائیں گے۔

دوسری جانب بعض ماہرین نے تحقیق پر اعتراض اٹھا تے ہوئے کہا کہ ہر قسم کی ورزش صحت کے لیے بہترین ہے جبکہ گالف کے علاوہ بہتر نیند اور صحت بخش خوراک بھی انسان کی عمر کو بڑھانے میں معاون ہے۔

0

20

Comments

comments