کرونا کی منٹوں میں تشخیص، متحدہ عرب امارات بازی لے گیا

ابوظبی: متحدہ عرب امارات  میں کرونا مریضوں کا سراغ اور اس کی تیز ترین تشخیص کے لیے جدید ٹیکنالوجی کا استعمال جلد شروع کردیا جائے گا۔

نئی ٹیکنالوجی کی بدولت متحدہ عرب امارات کو پوری دنیا میں نمایاں پوزیشن مل سکتی ہے۔ ماہرین کا کہناہے کہ نئی ٹیکنالوجی کی بدولت خون کے خلیوں میں کرونا وائرس پہنچتے ہی اس کاپتہ لگایا جاسکتا ہے۔

لیزر ٹیکنالوجی حاصل کرنے کے بعد پورے ملک میں کرونا کی تشخیص کے ٹیسٹ بڑے پیمانے پر تیزی سے کیے جائیں گے اور اس کے ساتھ متاثرین پر بھی نظر رکھی جائے گی۔

طبی عملے میں کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے بھی اس ٹیکنالوجی کو استعمال کیے جانے کا امکان ہے۔

اماراتی وزیر صحت عبدالرحمن العویس نے کا کہنا ہے کہ ’ کرونا وائرس کو پھیلنے سے روکنے کے لیے کوانٹ لیز کی ٹیکنالوجی موثر ثابت ہوگی، ہم دنیا بھر کے لیے اپنے دروازے کھولے ہوئے ہیں سب لوگ اس سے فائدہ اٹھاسکتے ہیں‘۔

انہوں نےمزید کہا کہ ’ نئی ٹیکنالوجی کے موثر ہونے کی آزمائش کے بعد بہترین نتائج کی امید ظاہر کی جارہی ہے،اگر یہ تجربہ کامیاب ہوجاتا ہے کہ لیزر ٹیکنالوجی کی بدولت ہمارا معاشرہ محفوظ ہوجائے گا ‘۔

0

20

Comments

comments