ذہنی وجسمانی طور پر مفلوج بچے نے آنکھوں کے اشاروں سے کتاب لکھ ڈالی

ذہنی وجسمانی طور پر مفلوج بچے نے آنکھوں سے کتاب لکھ ڈالی— فوٹو: سوشل میڈیا

ای ٹران فریم ایک خاص قسم کا شفاف پلاسٹک بورڈ ہوتا ہے جس میں حروف رنگین کوڈنگ سسٹم میں مبنی ہوتے ہیں، اس کے ذریعے گونگے اور ہاتھوں سے مفلوج افراد اشارہ کی مدد سے علیحدہ علیحدہ حروف کی نشاندہی کر کے بات چیت کرسکتے ہیں۔

جوناتھن نے بھی اسی طریقہ کار سے بات چیت کرنا شروع کی اور آنکھوں کی مدد سے ’eye can write‘ کتاب لکھ ڈالی۔

ایک انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ’میں آواز ہوں ان کے لیے جن کی آواز نہیں ہے، میری کتاب پڑھ کر لوگ میری نظر سے دیکھ سکیں گے اور میرا خدا پر کتنا مضبوط بھروسہ ہے جان سکیں گے‘۔