’عمران اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ عمدہ انداز میں تعلق نبھا رہے ہیں‘

سینئر تجزیہ نگار حسن نثار کا کہنا ہے کہ  وزیراعظم عمران خان اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ عمدہ تعلق نبھارہے ہیں اور اپوزیشن کو سوائے نیب کے کوئی پوچھنے کو تیار نہیں ہے۔

وہ جیو نیوز کے پروگرام ‘میرے مطابق’ میں میزبان شجعیہ نیازی سے گفتگو کررہے تھے۔ 

طلال چوہدری سے متعلق معاملے پر حسن نثار نے کہا کہ میڈیا کو طلال چوہدری کا ٹوٹا ہوا بازو نظر آرہا ہے لیکن یہ کوئی نہیں سوچتا کہ اس کے ٹوٹے ہوئے دل کا کیا بنے گا۔

عمران خان کے اپوزیشن کے استعفوں پر ضمنی انتخابات کے اعلان پر حسن نثار نے کہا کہ عمران خان نے یہ بلف کال کر کے کمال کام کیا ہے، اپوزیشن عمران خان کو ناتجربہ کار اور اناڑی کہتی ہے لیکن وہ انتہائی تحمل سے عملیت پسندی کا مظاہر ہ کرتے ہوئے اسٹیبلشمنٹ کے ساتھ عمدہ تعلق نبھا رہے ہیں، اپوزیشن کو سوائے نیب کے کوئی پوچھنے کو تیار نہیں ہے۔

انہوں نے کہا کہ حسن نثار کا کہنا تھا کہ کچھ وزراء اپنی رائے کا کھل کر اظہار کرتے ہیں تو عمران خان کو اس پر شکوہ نہیں فخر کرنا چاہئے، شیریں مزاری اور فواد چوہدری سمیت چند دیگر وزراء کھل کر بات کرتے ہیں تو مجھے خوشی ہوتی ہے، وفاداری اور چمچہ گیری میں فرق ہوتا ہے، عمران خان کے وزراء اس کے مشیر ہیں چمچے نہیں ہیں، باقی پارٹیوں میں ہر شخص اپنے لیڈر کی مرضی کی بات کرتا ہے یہ جمہوریت نہیں ہے۔

حسن نثار کا کہنا تھاکہ اس ملک میں ووٹ لے کر نہیں چھین کر اقتدار میں آیا جاتا رہا ہے، عوام کو سرسبز باغ دکھا کر ان کے ووٹ ہتھیائے جاتے ہیں، جس شخص کی چھت اپنی نہیں اس کی رائے کیسے اپنی ہوسکتی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ووٹ کو عزت دو جیسے نعرے احمقوں کیلئے ہوتے ہیں، سمجھدار آدمی کو ساری صورتحال کا علم ہوتا ہے۔

سینئر تجزیہ کار کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی نے نیب کے پنجے کاٹے تو ن لیگ اورپیپلزپارٹی سےمختلف نہیں سمجھی جائےگی۔